زلزلہ کے متعلق چند حقائق اور چند معلومات

زلزلے سے دنیا بھر میں ہر سال تقریباً 8،000 افراد ہلاک ہوتے ہیں اور پچھلے 4،000 سالوں میں تقریباً 13 ملین لوگ لقمہ اجل بنے ۔

  • پاکستان میں 8 اکتوبر 2005 کی صبح 8 بج کر 52 منٹ پر ملک کی تاریخ کا سب سے بدترین زلزلہ پیش آیا۔ اور ریکٹر اسکیل پر اس کی شدت 7.6 ریکارڈ ہوئی ۔  اس زلزلے نے پاکستان کے شمالی علاقہ جات کو   بری طرح متاثر کیا۔  اس سانحہ سے لاکھوں کی تعداد میں لوگ بےگھر ہوۓ۔
  • چین کے شہر شانسی میں 23 جنوری ، 1556  میں ایک خطرناک ترین زلزلہ آیا اور اس سے تقریباً 830،000 افراد ہلاک ہوۓ تھے۔
  • اوسطاً زلزلہ کا دورانیہ تقریباً  ایک منٹ کے لگ بھگ ہوتا  ہے۔
  • شدید نوعیت کے زلزلے کے بعد اس کے آفٹر شاکس کافی وقت  تک جاری رہ سکتے  ہیں ۔
  • امریکا کی ریاست کیلیفورنیا کے  شہر پارک فیلڈ کو “The Earthquake Capital of the World”کے نام سے جانا جاتا ہے، اور اس پر موجود پل دو ٹیکٹونک پلیٹوں پر پھیلا ہوا ہے ۔
  • زلزلے زیادہ تر ارضیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے رونما ہوتے ہیں ، اس کے ساتھ ساتھ لینڈ سلائیڈنگ ، ایٹمی تجر بات ، اور آتش فشانی کے عمل جیسی  سرگرمیوں کا نتیجہ بھی ہو سکتے ہیں ۔
  • دنیا کے جنوبی نصف کرہ کے مقابلے میں شمالی نصف کرہ میں زیادہ زلزلے آتے ہیں۔
  • ہندو عقائد کے مطابق    زمین کو آٹھ بڑے ہاتھیوں نے کچھوے کی پشت پر سنبھال  رکھا ہے۔  یہ کچھوہ  خود سانپ کے او پر کھڑا ہے۔ اب اگر ان میں سے کوئی جانور حرکت کرے تو  زلزلہ آتا ہے۔
  •  سمندر میں رونما ہونے والے زلزلے سونامی کا سبب بن سکتے ہیں۔
  • پیرو میں1970 کی دہائی میں آنے والے زلزلے کے نتیجے میں ایک خطرناک برفانی تودہ اپنی جگہ سے سرک گیا ۔  جس کے نتیجے میں  گاؤں  کے گاؤں  ختم ہو گئے  اور تقریباً  18000سے زائد لوگ ہلاک ہوۓ ۔
  • زلزلے  کی وجہ سے  دنیا میں بدترین لینڈ سلائیڈنگ کا آغاز 1920 میں چین کے صوبہ کانسو سے ہوا تھا ۔ وہاں مٹی کے تودے گرنے سے تقریبا 200،000 افراد ہلاک ہوگئے تھے ۔
  • زلزلے کو اس وقت بڑا سمجھا جاتا ہے جب اسکی پیمائشریکٹر سکیل پر  7.0  سے زیادہ رجسٹر ہو اس کے برعکس 3.0 یا اس سے کم شدت تقریبا ً محسوس بھی نہیں ہوتی ۔
  • 1906 میں کیلیفورنیا کا زلزلہ فوٹوگرافی کے ذریعہ ریکارڈ کی جانے والی پہلی بڑی آفات میں سے ایک تھا۔
  • ایک چینی ماہر فلکیات ژانگ ہینگ نے تقریبا 2،000 سال پہلے دنیا کا پہلا زلزلہ معلوم کرنے والا آلہ ایجاد کیا جو 370 میل دور سے زلزلے کا پتہ لگا سکتا تھا ۔
  • مشرقی بحیرہ روم میں AD  1201 ء میں آنے والے زلزلے کو تاریخ کا بدترین زلزلہ قرار دیا گیا ۔  اس سے تقریباً 10 لاکھ افراد کی ہلاکت ہوئی ۔
  • آتش فشاں کے  پھٹنے کی ایک وجہ   زلزلہ بھی  ہوسکتا ہے۔
  • دنیا میں سب سے طویل نوعیت کا زلزلہ بحر ہند میں 2004  میں ریکارڈ ہوا جس کا دورانیہ کم و بیش 10  منٹ تھا۔
  • امریکی سائنسدان چارلس ریکٹر نے 1935 میں زلزلے کی شدت ناپنے والا آلہ  )ریکٹر اسکیل (ایجاد کیا تھا۔
  • ایک سروے کے مطابق ایک سال کے دوران  دنیا بھر میں تقریباً  1،300،000 زلزلے آتے ہیں اور ان میں سے زیادہ تر کی شدت تقریباً 2.9 یا اس سے کم ہوتی  ہے ۔
  • دنیا میں ہر سال تقریباً 8.0 یا اس سے زائد کی شدت کا زلزلہ آتا ہے۔
  • چاند پر آنے والے زلزلے کو” چاند زلزلہ” کہا جاتا ہے۔ اور یہ زلزلے زمین پر آنے والے زلزلوں کی نسبت کمزور ہوتے ہیں ۔
  • امریکا کی  ریاست الاسکا میں 1964 میں  چار منٹ تک 9.2 شدت کا زلزلہ ریکارڈ کیا گیا اور اس کی وجہ سے سڑکیں عام سطح سے 20 فٹ نیچے دب  گئیں تھیں   ۔
  • کرہِ ارض پر  سب سے پہلے زلزلہ 1831میں چین کے شہر  شانڈونگ میں ریکارڈ کیا گیا  تھا۔
  • یونانی  سائنسدان  ارسطو نے  سب سے پہلےیہ بات واضع کی کہ نرم زمین میں  سخت زمین کی نسبت سے زیادہ زلزلے  آتے ہیں۔
  • دنیا میں سب سے زیادہ زلزلے جاپان میں آتے ہیں یہاں ہر سال ہزاروں کی تعداد میں زلزلے ریکارڈ ہوتے ہیں جبکہ ان شدت کم ہوتی ہے۔
  • جاپان میں 11 مارچ ، 2011 میں آنے والا 9.0 شدت  کا  زلزلہ جاپان کی تاریخ کا بدترین زلزلہ تھا۔ اس نے 30 فٹ اونچی سمندری لہروں کے ساتھ سونامی پیدا کیا جس سے ایٹمی بجلی گھروں کو شدید نقصان پہنچا۔
مزید دیکھیں

ملتے جلتے مضامین

اوپر جائیں
Close
error: Alert: Content is protected !!