پاکستان کے مشہور کھیل

پاکستان کی تاریخ میں  کھیلوں کو ایک خاص مقام حاصل  ہے۔ پاکستان نے  گذشتہ برسوں کے دوران مختلف کھیلوں میں  اپنے سنہری دن دیکھے ہیں اور کچھ کھیل مختلف وجوہات کی بناء پر اپنی  مقبولیت میں کھو بیٹھے ہیں ۔  پسند   اور  رجحانات بدلتے رہتے  ہیں لیکن ایک چیز بدستور باقی ہے اور وہ ہے پاکستانی قوم کا کھیلوں  سے پیار۔ پاکستان میں مشہور کھیلوں کی فہرست درج ذیل ہے۔

کرکٹ

پاکستان میں میں مقبولیت کے لحاظ سے کرکٹ کو پہلا نمبر حاصل  ہے ۔ جب بھی کرکٹ ورلڈ کپ یا  کسی معرکے کا وقت آتا ہے تو پوری قوم پر  کرکٹ کا بخار چڑھ جاتا  ہے۔  اِ نہیں جذبات  کے تحت مختلف عوامی مقامات پر میچز کو بڑی بڑی سکرینیں (TV Screens)نصب کر کے دیکھا جاتا ہے ۔ ملک کے مختلف حصوں میں لاکھوں  نہیں تو ہزاروں کرکٹ کلب ہیں اور ہر سال شہر میں بہت سے مقامی ٹورنامنٹ ہوتے ہیں۔ بچے اب بھی گلیوں میں ٹیپ بال کرکٹ کھیلتے ہیں اور عمران خان ،  شاہد آفریدی اور بابر اعظم  جیسے قومی ہیروز  کے انداز (Style)کو  کاپی کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

ہاکی

ہاکی وہ کھیل ہے جس نے پاکستان کو اولمپکس میں  3 طلائی تمغے اور 4 ورلڈ کپ دیئے ہیں۔ ہاکی ابتداء میں  پاکستان کا سب سے مشہور کھیل تھا۔ یہاں تک کے پاکستان کا قومی کھیل بھی ہاکی ہی ہے۔ آج کل یہ کھیل زوال کا شکار ہے۔ مناسب انفراسٹرکچر کی کمی  ہاکی کے زوال میں اہم کردار ادا کررہی ہے۔ جب تک کہ کوئی غیر معمولی  تبدیلیاں واقع نہ ہوں ، یہی  رجحان کا جاری رہنے کا امکان ہے۔

والی بال

والی بال پاکستان میں ایک مشہور کھیل ہے۔ یہ کھیل پاکستان کے دیہی علاقوں میں کافی مشہور ہے۔ والی بال کے بہت سے مقامی ایونٹ بڑے شہروں جیسے کراچی ، لاہور ، راولپنڈی  میں سال بھر منعقد ہوتے ہیں۔

باکسنگ

باکسنگ پاکستان میں تیزی سے مقبولیت حاصل کر رہی ہے۔ دیگر کھیلوں کے مقابلے میں ، پاکستانی باکسروں نے بین الاقوامی مقابلوں میں معقول کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ تقریباً پاکستان کےتمام  بڑے شہروں میں باکسنگ کلب موجود ہیں  ۔ پاکستان میں باکسنگ کی حالیہ مقبولیت کی ایک بڑی وجہ شاید پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان بھی ہیں۔ اگرچہ عامر خان  باضابطہ طور پر پاکستان کی نمائندگی نہیں کرتے ، لیکن ان کی پاکستان میں بہت بڑی فین فالوونگ ہے ۔

ٹینس

ٹینس یقینی طور پر پاکستان کے شہری طبقے میں سب سے زیادہ دیکھا جانے والا کھیل ہے۔ فیڈرر ، نڈال اور جوکووچ جیسے بین الاقوامی اسٹارز کے ہزاروں مداح پاکستان میں موجود ہیں ۔  تاہم ، اگر ہم کھلاڑیوں کی تعداد پر نظر ڈالیں تو ، پاکستان میں ٹینس کے پروفیشنل  کھلاڑی بہت کم ہیں۔ اس کی بنیادی وجہ بنیادی تنظیمی ڈھانچے  کا فقدان ہے۔

اسکواش

پاکستان 20 سال پہلے  اسکواش میں عالمی چیمپین کے طور پر  جانا جاتا تھا ۔  جہانگیر خان اور جہاں شیر خان جیسے کھلاڑی 90 کی دہائی میں عالمی چیمپین تھے۔ آجکل  پاکستانی کھلاڑی بین الاقوامی سطح پر ایک مضبوط اثر مرتب کرنے میں ناکام رہے ہیں ۔جس کی بنیادی وجہ  ملک میں اسکواش کورٹس کی محدود تعداد اور ان کورٹس  کی ممبرشپ فیس عام آدمی کی رسائی سے باہر ہے۔

بیڈمنٹن

بیڈمنٹن پاکستان میں بہت  مشہور ہے کیونکہ یہ ایک ایسا  کھیل ہے، جس کی قیمت کم ہے، اور اسے صرف دو کھلاڑیوں کی ضرورت ہوتی ہے اور یہ کہیں بھی کھیلا جاسکتا ہے۔ یہ کھیل کافی عرصے سے پاکستان کے اسکولوں ، کالجوں اور یونیورسٹیوں میں کھیلا جارہا ہے۔ یہ شاید پاکستان کا واحد کھیل ہے جو خواتین مردوں  کی نسبت ذیادہ کھیلتی ہیں ۔

ٹیبل ٹینس

یہ  کھیل بھی  پاکستان میں مشہور ہے۔ یہ تقریبا ہر اسکول ، کالج اور یونیورسٹی میں کھیلا جاتا ہے۔ ملک میں بھی بہت سے ٹیبل ٹینس کلب موجود ہیں۔ لیکن بہت سے دوسرے کھیلوں کی طرح اس کھیل کے لئے بھی مناسب ڈھانچہ موجود نہیں ہے۔

سنوکر

اسنوکر پاکستان میں کافی عرصے سے مشہور ہے۔ محمد آصف (آئی ایس بی ایف ورلڈ سنوکر چیمپینشپ کا فاتح)  بین الاقوامی سطح پرایک مشہور نام ہے ۔  ملک بھر کے سیکڑوں سنوکر کلبوں میں ، ہزاروں نوجوان کھلاڑی اسنوکر کھیلتے ہیں۔ اسنوکر کے کھلاڑیوں کے لئے شاید ہی تربیت کے کوئی  پروگرام ہوں۔ زیادہ تر لوگ   اسے مشغلے کے طور پر کھیلتے ہیں۔

مزید دیکھیں

ملتے جلتے مضامین

اوپر جائیں
Close
error: Alert: Content is protected !!